Breaking News
Home / اہم خبریں / ٹی ٹوئنٹی اننگز شروع ہونے سے پہلے ہی بھارت کوپاکستان کے خلاف 10رنز کیوں دئیے گئے؟پاکستان کو اس کی وجہ سے میچ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا

ٹی ٹوئنٹی اننگز شروع ہونے سے پہلے ہی بھارت کوپاکستان کے خلاف 10رنز کیوں دئیے گئے؟پاکستان کو اس کی وجہ سے میچ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا

جمیکا(ویب ڈیسک )ویسٹ انڈیز میں جاری ویمنز ورلڈ ٹی20 ٹورنامنٹ میں بھارت کے خلاف میچ میں پاکستانی خواتین بلے بازوں نے فارمیٹ میں اپنا سب سے بڑا مجموعہ 133 اسکور کیا لیکن یہ کاوش بھی گرین شرٹس کو شکست سے نہ بچا سکی۔اس شکست سے قطع نظر میچ کے دوران پاکستان ویمنز ٹیم کا غیر پیشہ ورانہ رویہ ناصرف قومی ٹیم کی جگ ہنسائی کا سبب بنا بلکہ ساتھ ساتھ حریف ٹیم کی فتح کی راہ بھی ہموار کر گیا۔پاکستان نے ایونٹ کی فیورٹ ٹیموں میں سے ایک بھارت کے خلاف 7 وکٹوں کے نقصان پر 133رنز کا مجموعہ ترتیب دیا۔
تاہم پاکستانی اننگز کے اختتام سے قبل اس وقت دلچسپ صورتحال دیکھنے کو ملی جب امپائرز نے 13ویں اوور میں پاکستان کی بلے بازوں کو وکٹ کے ممنوعہ حصے میں دوڑنے پر وارننگ جاری کی۔پھر 18ویں اوور میں بھی انہی دونوں بلے بازوں نے وہی غلطی دہرائی جس پر دونوں امپائروں نے مشاورت کے بعد پاکستان کے خلاف بھارت کو 5 رنز بطور پینالٹی ایوارڈ کر دیے۔اننگز کی آخری بال ڈرامائی ثابت ہوئی جس پر ثنا میر کے خلاف ایل بی ڈبلیو کی اپیل کی گئی لیکن وہ کریز میں پہنچ چکی تھیں تاہم پاکستانی ٹیم کو اس وقت دھچکا لگا جب امپائر نے دوبارہ ممنوعہ ایریا میں دوڑنے پر پاکستان کے خلاف مزید 5 رنز کی پینالٹی ایوارڈ کردی۔
پاکستان نے 7وکٹوں کے نقصان پر 133رنز بنائے جو اس کا ٹی20 میں اب تک کا سب سے بہترین مجموعہ ہے، لیکن دس رنز کی پینالٹی کے سبب بھارت نے 10رنز بغیر کسی نقصان کے اننگز کا آغاز کیا۔بھارت نے روایتی حریف کی اس غلطی کی بدولت میچ میں سات وکٹ سے باآسانی فتح حاصل کر لی۔پاکستان کی کپتان جویریہ خان نے تسلیم کیا کہ پاکستان نے اس سلسلے میں بدترین کھیل پیش کیا جس سے حریف کی میچ جیتنے کی راہ ہموار ہوئی۔انہوں نے کہا کہ ہم نے غیر پیشہ ورانہ رویے کا مظاہرہ کیا اور یہ پہلا موقع نہیں کہ ہم نے ایسا کیا بلکہ ہم سری لنکا میں بھی یہی غلطی کر چکے ہیں۔
The post ٹی ٹوئنٹی اننگز شروع ہونے سے پہلے ہی بھارت کوپاکستان کے خلاف 10رنز کیوں دئیے گئے؟پاکستان کو اس کی وجہ سے میچ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا appeared first on Urdu News.