بیوی پر شک کی وجہ سے شوہر نے قرنطینہ سے بھاگ کر بیوی کا ہاتھ کاٹ دیا

بھارت میں قرنطینہ سینٹر سے فرار ہونے والے شخص نے بیوی پر شک ہونے کی بنیاد پر ہاتھ کاٹ دیا۔کورونا وائرس کی وبا اس وقت دنیا بھر میں پھیلی ہوئی ہے جس کے بعد دنیا بھر کے ممالک میں لاک ڈاؤن کر دیا گیا ہے۔ اس لاک ڈاؤن میں کیونکہ لوگ گھروں میں رہنے پر مجبور ہیں،اس لئے بہت سےگھریلو تشدد کے واقعات سامنے آ رہے ہیں۔

میاں بیوی کے جھگڑوں میں بہت زیادہ اضافہ ہوگیا ہے۔ایسا ہی ایک واقعہ بھارت میں پیش آیا ہے جہاں بھارتی ریاست چھتیس گڑھ میں قرنطینہ سینٹر میں رہنے والا شخص بیوی کے بدچلن ہونے کے شک پرقرنطینہ سینٹر سے بھاگ گیا

یہ شخص قرنطینہ میں موجود تھا تو اس کو شک ہوا کہ اس کی بیوی کا کسی اور کے ساتھ چکر چل رہا ہے یہی سوچ کر وہ وہاں سے فرار ہو گیا۔26 سالہ نوجوان جب گھر پہنچا تو اس نے اپنی بیوی کو کسی دوسرے شخص کے ساتھ فون پر بات کرتے ہوئے دیکھا تو وہ غصے میں آگیا اور بیوی کا ہاتھ کاٹ دیا۔واقعہ کے بعد اہل محلہ نے خاتون کو ہسپتال پہنچایا مگر لڑکی کے ہاتھ کو جوڑا نہ جاسکا پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے شوہر کو گرفتار کرلیا۔

نوجوان نے پولیس کو بتایا ہے کہ جب وہ قرنطینہ میں تھا اس کی بیوی کا فون ہمیشہ مصروف رہتا تھا جس پر اسے اپنی بیوی کے کردار پر شک ہوا۔یہی وجہ ہے کہ وہ قرنطینہ سنٹر سے بھاگ نکلا اور جب گھر پہنچا تو اپنی بیوی کو کسی دوسرے شخص کے ساتھ فون پر باتیں کرتے ہوئے دیکھا جس پر مجھے غصہ آیا اور بیوی کا وہ ہاتھ کاٹ دیا جس سے اس نے فون پکڑا ہوا تھا