پٹرول کی مصنوعی قلت پیدا کرنے پر غیر ملکی کمپنیوں پر کروڑوں کے جرمانے عائد، اوگرا

اسلام آباد: اوگرا نے نے پٹرول کی مصنوعی قلت کرنے پر مختلف کمپنیوں کو 4 کروڑ کے جرمانے کر دیے۔

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی(اوگرا) نے ملک میں کام کرنے والی کمپنیوں کو پٹرول سپلائی نہ کرنے پر جرمانے کیے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ٹوٹل کمپنی کو ایک کروڑ، شیل کمپنی کو ایک کروڑ، جبکہ گو، اٹک پٹرولیم، پوما انرجی اور میسکول کو 50لاکھ فی کس جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔


اوگرا نے اپنے نوٹس میں کہا ہے کہ تمام کمپنیاں تیس روز کے اندر جرمانے جمع کروائیں گی، اسکے علاوہ اگر کوئی کمپنی عدالت سے رجوع کنا چاہتی ہے تو وہ آدھا جرمانہ جمع کروا کر اپنا کیس عدالت لے جا سکتی ہے۔ اوگرا نے اپنے نوٹس میں مزید کہا کہ اگر پٹرول کی قلت جاری رکھی گئی تو کمپنیوں کو مزید جرمانوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

واضح رہے کہ اوگرا نے مزید 3 کمپنیوں کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے 24 گھنٹوں میں جواب طلب کیا ہے۔ ان 3 کمپنیوں میں بائیکو، اسکر پٹرولیم اور بی ای انرجی شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ارتغرل غازی کی ایک اور اداکارہ نے پاکستان آنے کی خواہش ظاہر کر دی

خیال رہے کہ اوگرا نے 3 جون کو چھ کمپنیوں کو پٹرول کی مصنوعی قلت کرنے پر شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے چوپیس گھنٹوں میں جواب طلب کیا تھا، کمپنیوں کی جانب سے جواب جمع نہ کروانے پر مزید 24 گھنٹے کی مہلت دی گئی تھی۔ لیکن کمپنیوں کی جانب سے تسلی بخش جواب نا آنے پر اوگرا نے مزکورہ کمپنیوں پر جرمانے عائد کر دیے ہیں۔