مشہور گیم پب جی نے ایک اور لڑکے کی جان لے لی

ممبئی: بھارت کی ریاست راجھستان میں پب جی کھیلنے والے لڑکے نے خودکشی کر لی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست راجھستان میں ایک 14 سالہ نوجوان نے خودکشی کر لی ہے جس کی وجہ پب جی بتائی جا رہی ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق 14 سالہ نوجوان بھارتی فوجی کا بیٹا تھا اور نویں جماعت کا طالب علم تھا۔

پولیس نے بتایا ہے کہ خودکشی سے 3 دن پہلے نوجوان نے اپنی والدہ کے موبائل میں مزکورہ گیم انسٹال کی تھی اور مسلسل 3 دن سے وہ یہی گیم کھیل رہا تھا۔ پولیس رپورٹ کے مطابق لڑکے کا بھائی رات کو 3 بجے کمرے میں سونے کے لیے آیا تو وہ گیم کھیل رہا تھا جس کے بعد اسکا بھائی سو گیا لیکن جب صبح اٹھا تو دوسرے کمرے میں بھائی کی لاش کو لٹکا ہوا پایا۔

واقع کے فوری بعد لڑکے کے اہل خانہ اسے قریبی ہسپتال لے کر گئے جہاں ڈاکٹروں نے بچے کی موت کی تصدیق کی۔

اس نوعیت کے واقعات بھارت میں پہلے بھی پیش آ چکے ہیں۔ بھارت میں پب جی کھیلنے سے ایک نوجوان کو دماغی فالج کا اٹیک ہو گیا تھا جس کی فوری طور پر سرجری کی گئی لیکن نوجوان ہسپتال میں ہی دم توڑ گیا۔ ماہرین نے بتایا کا بچے کے دماغ کی رگ پھٹ چکی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: ویڈیو گیم کی نقل کرتے ہوئے 2 بچوں نے عمارت سے چھلانگ لگا دی، والدین نے کمپنی پر مقدمہ کر دیا

اسی طرح کا ایک اور واقع بھارت کی ریاست کرناٹک میں پیش آیا جہاں پب جی نہ کھیلنے دینے پر ایک نوجوان نے اپنے باپ کی گردن کاٹ کر قتل کر دیا تھا۔