حامد میر کے بے بنیاد اور من گھڑت الزام لگانے پر وزیر اعلی عثمان بزدار نے قانونی نوٹس بھیج دیا

لاہور: وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے جیو نیوز کے سینئر صحافی حامد میر کو بے بنیاد اور من گھڑت الزامات لگانے پر قانونی نوٹس بھجوا دیا ہے، حامد میر نے نجی ٹی وی چینل ہم ٹی وی کے پروگرام میں وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار پر الزامات عائد کیے تھے، جس پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی جانب سے تردید بھی کی گئی تھی۔

حامد میر نے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ عثمان بزدار نے انکشاف کیا ہے کہ شوگر بحران میں جو سبسڈی دی گئی تھی وہ مجھ سے عمران خان نے دلوائی میرے پاس اس کے ثبوت موجود ہیں، عمران خان میرے سامنے بول بھی نہیں سکتا میں نے اپنے والد کے نام پر ہسپتال بنایا ہےعمران خان میرے سامنے پر بھی نہیں ما ر سکتا۔

حامد میر نے ایک ادھورا محاورہ بولتے ہوئے کہا تھا کہ عمران خان کو آئندہ آنے والے دنوں میں پتا چلے گا کہ عثمان بزدار کو انہوں نے آستین میں ۔۔۔۔۔ پالا ہے۔
صحافی حامد میر کے ان بے بنیاد اور من گھڑت الزامات پر وزیراعلی عثمان بزدار نے حامد میر کے خلاف قانونی کاروائی کا فیصلہ کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: ایم پی اے کی گاڑی پر ”8 دن باقی” لکھنا مہنگا پڑ گیا، غریب چرواہے کو جیل میں ڈال دیا گیا

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پنجاب حکومت کے ترجمان نے اپنے جاری پیغام میں حامد میر کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ اینکر پرسن محمد مالک کے پروگرام میں حامد میر کی جانب سے وزیر اعلی پنجاب کے حوالے سے بے بنیاد اور من گھڑت الزامات کی شدید مذمت کرتےہیں، وزیر اعلی پنجاب نے اپنی لیگل ٹیم کو قانونی کارروائی شروع کرنے کی ہدایت کردی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں