برطانیہ میں 19 سالہ مسلمان لڑکی کے قتل میں ملوث 2 ا‌فراد گرفتار

مانچسٹر: برطانیہ میں 19 سالہ آیہ ہاشم نامی مسلمان لڑکی کے قتل کی واردات میں ملوث 2 ملزمان پر فرد جرم عائد کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ میں چند روز قبل افطاری کا سامان لینے کے لیے نکلنے والی مسلمان طالبہ کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا، لڑکی کا تعلق لبنان سے ہے، پولیس نے قتل میں ملوث 2 افراد کو چارج کرلیا ہے۔

برطانوی پولیس نے بتایا ہے کہ فیروز سلیمان اور ابوبکر ساتیا نامی دو لوگوں کو قتل اور اقدام قتل کی دفعات کے تحت چارج کیا ہے، دونوں ملزمان کو عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: افطاری کی خریداری کرنے کے لیے جانے والی 19 سالہ لڑکی کو قتل کر دیا گیا

واضح رہے کہ کچھ دن پہلے آیہ ہاشم کواس وقت قتل کردیا گیا تھا جب وہ گھر سے افطاری لینے نکلی تھیں، پولیس کا کہنا تھا کہ مقتولہ آیہ ہاشم سلفورڈ یونیورسٹی میں قانون کی سٹوڈنٹ تھیں اور فلاحی تنظیموں کے ساتھ ملکربھی خدمات سر انجام دیتی رہتی تھیں اور اس دوران انہوں نے کئی ایوارڈز بھی جیتے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں