بچپن میں اغوا کیے جانے والا بچہ 32 سال بعد والدین کو مل گیا

بیجنگ: چین میں ایک ہوٹل کے باہر سے اغوا کیا جانے والا بچہ 32 سال بعد والدین کو مل گیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق 32 سال قبل 1988 میں چینی بچے ما ین کو ایک ہوٹل کے باہر سے اغوا کیا گیا تھا اور اس وقتاس کی عمر 2 سال تھی۔

اغوا کیے جانے کے بعد اس لڑکے کو ایک بے اولاد جوڑے کو فروخت کردیا گیا تھا جس نے اس کی اپنی اولاد کی طرح پرورش کی ۔ پولیس کو اغوا ہونے والے بچے کے حوالے سے کچھ اطلاعات موصول ہوئیں کہ چینی صوبے سیچوان سے تعلق رکھنے والا ایک شخص 1988 میں ایک بچہ لے کر آیا تھا جس پر پولیس نے تحقیقات کیں۔

پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے پہلے بچے کو بازیاب کروایا اور تصدیق کی کہ اسی بچے کو ہوٹل کے باہر سے اغوا کیا گیا تھا۔پولیس نے 32 سال قبل اغوا کیے جانے والے اس لڑکے کو اس کے حقیقی والدین تک پہنچانے کے لیے چہرہ شناخت کرنے والی ٹیکنالوجی اور ڈی این اے کا سہارا لیا۔

یہ بھی پڑھیں: افطاری کی خریداری کرنے کے لیے جانے والی 19 سالہ لڑکی کو قتل کر دیا گیا

پولیس کے مطابق بچے کی بچپن کی تصاویر جمع کی گئیں اور والدین کی تلاش کے لیے نیشنل ڈیٹا بیس سے مدد لی جس کے بعد پولیس نے اس 34 سالہ لڑکے کو اس کے والدین کے حوالے کیا جنہوں نے اپنے بچے کی تلاش کے لیے دن رات محنت کی۔ بیٹے سے برسوں بعد ملاقات کے بعد ماں باپ آبدیدہ ہوگئے۔

اس موقع پر ماں کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے بیٹے کی تلاش کے لیے نوکری چھوڑی دی اور حکام کو ایک لاکھ سے زائد خطوط بھیجے جب کہ کئی مرتبہ متعدد ٹی وی چینلز پر اپنے بچے کی واپسی کے لیے اپیل کی

اپنا تبصرہ بھیجیں