اہم اسلامی ملک میں چمکادڑیں پھر سے کھائی جانے لگیں،جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

جکارتہ: چین کے متعلق تو سب کو معلوم ہے کہ وہاں لوگ چمگادڑیں، سانپ اور اس طرح کا سب کچھ کھاتے ہیں لیکن آپ کو یہ جان کر حیرانی ہو گی کہ سب سے بڑے اسلامی ملک انڈونیشیاءمیں بھی لوگ چمگادڑیں اور دیگر جنگلی جانور کھاتے ہیں۔

کورونا وائرس پھیلنے کے بعد باقی ممالک کی طرح انڈونیشیاءمیں بھی ان جانوروں کے گوشت کی فروخت بند کر دی گئی تھی تاہم اب کورونا وائرس جو پہلے سے زیادہ پھیل رہا ہے اور انڈونیشیاءمیں چمگادڑوں، سانپوں، چوہوں، چھپکلیوں اور دیگر جانوروں کے گوشت کی مارکیٹیں کھول دی گئی ہیں

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق انڈونیشیاءمیں ایک توہومون نامی مارکیٹ ہے جو ملک کی جنگلی جانوروں کے گوشت کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے۔ جانوروں کے تحفظ کے لیے کام کرنے والے کارکنوں کا کہنا ہے کہ ووہان میں جنگلی جانوروں کا گوشت کھانے سے جو کچھ ہوا، انڈونیشیاءنے اس سے کوئی سبق نہیں لیا اور چند روز توہومون مارکیٹ بند رکھنے کے بعد دوبارہ کھول دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں: خنزیر کا بچہ لیکن شکل انسان جیسی،بچے کی پیدائش نے دنیا کو ہلا دیا

یہاں آوارہ کتے اور بلیوں کے ساتھ لوگوں کے پالتو کتے اور بلیاں بھی چوری کر کے لائے جاتے اور کاٹ کر ان کا گوشت بیچا جاتا ہے