نماز اور تراویح مساجد میں ادا کی جائیں، کاروبار کھلا ہے تو مساجد کیوں بند ہیں۔ مفتی تقی عثمانی

اسلام آباد: پاکستان کے معروف عالم دین مفتی تقی عثمانی نے مسسلمانوں سے کہا ہے کہ وہ نمازیں اور تراویح مسجد میں ادا کریں، نماز جمعہ بھی مسجد میں پڑھیں۔

اپنے پیغام میں مفتی تقی عثمانی نے کہا کہ کورونا کی وبا اندازے سے زیادہ طویل ہوتی جارہی ہے اور کچھ پتا نہیں کہ کب ختم ہوگی اس لیے غیر معینہ مدت تک کاروبار اور زندگی کو بالکل روکا نہیں جاسکتا اور نہ ہی عبادت گاہوں کو بند رکھا جاسکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تمام مسلمانوں سے درخواست ہے کہ رمضان المبارک اور آخرے عشرے کے باقی مبارک لمحات کو غنیمت سمجھ کر عبادتوں اور دعاؤں کا خاص اہتمام کریں، مساجد کو باجماعت نمازوں سے آباد کریں ، جمعہ بے خوف و خطر مگر احتیاطی تدابیر کے ساتھ مسجدوں میں ادا کریں۔ تراویح کا اہتمام کریں اور عید کی نماز بھی احتیاطی تدابیر کے ساتھ ادا کریں۔

یہ بھی پڑھیں: افغان طالبان نے عید کے بعد بھارت کے خلاف جہاد کی خبروں کی تردید کر دی

انہوں نے کہا امید ہے کہ حکومت کی جانب سے عبادات کی ادائیگی میں کوئی رکاوٹ نہیں ڈالی جائے گی۔ انہوں نے اپیل کی کہ وبا کے خاتمے، ملک سے انتشار اور فرقہ واریت کے خاتمے کیلئے حکومت اور شہری اپنا کردار ادا کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں