وزیراعلیٰ سندھ سازش کے تحت سندھ میں مزہبی انتشار پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں، تحریک انصاف کے رہنما حلیم عادل شیخ

کراچی : تحریک انصاف کے رہنما وپارلیمانی لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے انصاف ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایک سازش کے تحت سندھ حکومت نے مساجد کو بند کروایاہے

وزیراعلیٰ سندھ صوبے میں مذہبی انتشار پھیلانا چاہتے ہیں اس وقت مساجد بند ہونے کے ساتھ امام بارگاہوں کو بھی بند رکھا ہوا ہے، ہم سندھ میں مذہبی فساد ہوتا ہوا دیکھ رہے ہیں جو کسی بھی حال میں نہیں ہونا چاہیے ، یہ سب ہی جانتے ہیں کہ رمضان کے مہینے میں سندھ حکومت نے عوام کو عبادت نہیں کرنے دی اور ماہ رمضان کے مقدس مہینے میں سندھ حکومت نے عوام کو عبادت سے محروم رکھا ، وزیراعلیٰ سندھ کو معلوم ہے کہ وہ اس سیٹ سے جانے والے نہیں ہے ان کی نوکری پکی ہوچکی ہے ،وزیراعلیٰ کی کنجی سے 15ہزار ارب روپے نکلے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ حکومت نے ٹرانسپورٹ کھولنے سے انکار کر دیا

سندھ حکومت کی نااہلی کی بڑی مثال یہ ہے کہ کاریں چل رہی ہیں مگر پبلک کے لیے ٹرانسپو رٹ بند ہے ،ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ ٹرانسپورٹ کو فوراً کھولا جائے اگر عام آدمی کے لیے یہ سب کچھ میسر نہیں ہے تو سندھ حکومت کے وزیروں کو بھی سفر کرنے کا حق نہیں پہنچتا، عید کا موسم ہے چاہتے ہیں کہ ایس اوپیز کے تحت ٹرانسپورٹ کا مطالبہ فوری حل کیا جائے ،تاکہ پردیسی اور مزدور طبقہ عید کے روز اپنے گھروں کو جاسکے۔

وفاقی حکومت جب ٹرانسپورٹ اور ٹرینیں کھولنے کی بات کرتی ہے تو سندھ حکومت کا شاہی فرمان سننے کو ملتا ہے کہ نہ تو ہم ٹرانسپورٹ کھولیں گے اور نہ ہی ٹرینیں چلنے دینگے